Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

کورونا:15ستمبر تک تعلیمی ادارے نہیں کھولے جاسکتے:چیئرمین ایچ ای سی

قائمہ کمیٹی سینٹ کااعلیٰ تعلیم کیلئے فیس اسٹرکچر نہ ہونے پر تشویش کااظہار

265
Spread the love

اسلام آباد:سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی نے کورونا کے باعث طلبا کے تعلیمی نقصان ، آن لائن تعلیم کے لیے سب کے پاس وسائل نہ ہونے اور اعلی تعلیم کے لیے فیس اسٹرکچر زیادہ ہونے پر اظہار تشویش کیاہے۔ کمیٹی چیئرپرسن سینیٹرروبینہ خالد نے اعلی تعلیمی کمیشن کے فنڈز کو بڑھانے اور طلبا کو تعلیم کے لیے قرض دینے کی تجویز پیش کردی ۔ چیئرمین ایچ ای سی نے بتایا 15 ستمبر تک تعلیمی اداروں کو نہیں کھولا جاسکتا، پروفیشنل ڈگریوں میں داخلوں کیلئے طلبا کو انٹری ٹیسٹ کے عمل سے گزرنا ہوگا۔ اجلاس سینیٹر روبینہ خالد کی زیر صدارت ہوا جس میں ملکی جامعات کے وائس چانسلرز نے زوم کے ذریعے شرکت کی ۔چیئرمین ایچ ای سی نے بتایا کہ 15 ستمبر تک تعلیمی اداروں کو نہیں کھولا جاسکتا، پروفیشنل ڈگریوں میں داخلوں کیلئے طلبا کو انٹری ٹیسٹ کے عمل سے گزرنا ہوگا۔ یونیورسٹیز میں داخلوں کیلئے تمام جامعات کو گائیڈ لائینز جاری کردی گئی ہیں، وزارت تعلیم کے حکام نے بتایا بلوچستان، جی بی، فاٹا ، دیگر علاقوں میں مسائل موجود ہیں ۔ ڈیٹا سینٹر بنائے جائیں گے تو وہاں ہر سٹوڈنٹ کی رسائی ہوگی ۔ ایچ ای سی، صوبے اور پی ٹی اے کا مشترکہ اجلاس طلب کیا گیاہے