Official Web

کامسیٹس اورامریکی یونیورسٹی کے درمیان مفاہمتی یادداشت پردستخط

231
Spread the love

اسلام آباد:کامسیٹس(جنوبی جنوب خطے میں پائیدارترقی کیلئے سائنس اورٹیکنالوجی کمیشن)اور امریکا کی یونیورسٹی برائے پائیداری ترقی نے مفاہمت کی ایک یادداشت پردستخط کیے ہیں،جس کے تحت دونوں فریقین سائنس اور ٹیکنالوجی کے میدان میں جدت طرازی کے حصول کے لیے کام کریں گے ،تاکہ عالمی سطح پرپائیدار ترقی کے اہداف کا حصول ممکن بنایا جاسکے۔کامسیٹس کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ڈاکٹر ایس ایم جنید زیدی کے مطابق مفاہمت کی اس یادداشت کا مقصد باہمی تعاون اور مشترکہ کوششوں کے ساتھ آگے بڑھناہے تاکہ منصفانہ طریقے سے انسان دوست تبدیلیوں کی رفتاراور پرامن بقائے باہمی کے عمل کوتقویت دینے کے ساتھ اسے قابل عمل بھی بنایا جاسکے۔مفاہمت کی اس یاداشت کا ایک مقصد معروف عالمی سائنسدانوں اور ریاستی عہدیداروں کی رہنمائی اور تعاون کا حصول بھی ہے۔امریکا کی یونیورسٹی برائے پائیداری ترقی کے بانی صدر ڈاکٹر کینتھ اسٹوکس نے مفاہمت کی مذکورہ یادداشت کے حوالے سے کہاکہ یونیورسٹی پراب مقامی اور عالمی سطح پر بہتر معاشرتی نظام کے فروغ کی ذمہ داری کے ساتھ جنوبی جنوب خطے کے ساتھ ہم آہنگ ہونے کی ذمہ داری بھی شامل ہوچکی ہے۔انہوں نیاپنے بیان میں اس پہلو پرخاص طور پرزوردیا کہ کوڈ 19 وبائی مرض کے حالیہ منظر نامے میںیہ ذمے داری مزید اہمیت اختیا کرگئی ہے کیوں کہ کوروناوائرس سیپیداہونے والے بحران نے ملکوں کی سرحدوں اور دیواروں کو بے معنی کرکے رکھ دیاہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ کامسیٹس کے ساتھ یونیورسٹی کی شراکت داری کا عمل مشترکہ مسائل سے نمٹنے،پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول،سائنس اورٹیکنالوجی کے میدان میں جدت کے عمل کو تیزتر بنانے کے لیے ایک اہم قدم ثابت ہوگا۔