Official Web

 قیام ریاست مدینہ کیلئےگھرسےدعوت تبلیغ ضروری ہے:پیراظہاربخاری

48
Spread the love

راولپنڈی :مسجد لالکڑتی میں دعوت وتبلیغ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے معروف مذہبی اسکالر علامہ پیر سید اظہار بخاری نے کہا کہ قیام ریاست مدینہ کیلئے گھر سے دعوت تبلیغ ضروری ہے ۔دعوت تبلیغ کے ذریعے پائیدارامن وامان تعلیمات نبوی کی روشنی میں حاصل کیا جا سکتا ہے۔ علمائے حق اشاعت دین ہی نہیں امن و امان کے بھی آمین ھےآدم سے خاتم تک نبوت کا دروازہ بند ہو گیا نبوت ختم ہوئی ہے نبی پاک کا نظام اور پیغام ختم نہیں ہوا ختم نبوت کے بعد دین کا کام اب امت مسلمہ نیادا کرنا ہے نبی کی نرینہ اولاد کا دنیا سے پردہ کرنا بھی اس بات کا ثبوت ہے کہ دنیادار کی ان کے بیٹے کو نبی نہ بنادیں ۔اللہ نینرینہ اولاد کی نبوت کو برداشت نہیں کیا تو ہم مرز ائیوں کو کیسے برداشت کر لیں ۔ اظہار بخاری نے کہا کہ نبوت کے دعوے سے جہنم کا اشاعت دین کی دعوت سے جنت کا دروازہ کھل جاتا ہے اشاعت دین سے انسانی زندگی کی کھیتیاں ہمیشہ سر سبز وشاداب رہتی ہیں مفاہمت اور بھائی چارہ اسلام کی بنیادجس پر پورے دن کا انحصار ہے۔ مبلغین اسلام یہودی معاشرے کی گندی بداعمالی اور فرسودہ قوانین کے خاتمے میں اسلام کی روشن خیالی کا پیغام انسانیت پر منتقل کرنے کے لیے اشاعت دین کا راستہ ابنائیں اسلام میں پورے کے پورے داخل ہو جا ۔ریاست مدینہ کا باب کھل جائے گا۔علمائے کرام دعوت وتبلیغ کاپرچار کریں کوئی مانے نہ مانے ہدایت دینا ہمارا نہیں خدا کا کام ہے۔ قیام پاکستان کا مقصد ریاست مدینہ تشکیل دینا تھا جو صحیح معنوں میں فلاحی معاشرے کے قیام میں بھر پور کردار ادا کرے لیکن گندی ذہنیت نے معاشرے کو فلاحی معاشرہ تشکیل نہیں ہونے دیا اور علما کرام نے بھی حقوق العبادکی اہمیت کو اجاگر کرنے میں کوئی اہم کردار ادا نہیں کیا۔