Official Web

بھارت:زہریلی شراب پینے سے80 افرادہلاک ہوگئے

بھارتی پنجاب اور اتر پردیش میں زیادہ ہلاکتوں کی اطلاعات

224
Spread the love

نئی نئی:بھارتی پنجاب میں زہریلی شراب پینے سے مرنے والوں کی تعداد 80 سے زائد ہوگئی۔ وزیر اعلیٰ امریندر سنگھ نے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ یہ ہلاکتیں چند دنوں میں ہوئیں۔غیر ملکی نیوز ایجنسی کے مطابق شمالی ریاست کے 3 اضلاع میں یہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔پولیس نے اس سلسلے میں 25 افراد کو حراست میں لیا ہے۔ ایک اہلکار کے مطابق گورداسپور ضلع میں 11افراد ہلاک ہوئے۔اطلاعات کے مطابق امرتسر میں 12 اور ترن تارن ضلع میں 63 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔بھارتی ریاست آندھرا پردیش اور پنجاب میں کورونا کے باعث شراب کی دکانیں بند ہیں تاہم شراب کی لت پوری کرنے کے لیے سینی ٹائزر کو پانی، سافٹ ڈرنکس اور جعلی شراب میں ملا کر پینا شروع کردیا جس کے باعث اب تک 38 افراد ہلاک ہوگئے۔بھارتی میڈیا کے مطابق نشئیوں کی ہلاکتیں امرتسر، بٹالہ اور ترن ترن کے اضلاع میں ہوئی جب کہ ہلاکتوں کے واقعات مزید بڑھتے جارہے ہیں، دوسری جانب  بھارتی پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ نے جالندھر کے ڈویژنل کمشنر کی سربراہی میں عدالتی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔