Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

احترام محرم میں قوم خرافات کا باب بند کرکے متحد ہوجائے اظہار بخاری

38
Spread the love

محمدی مسجد لال کرتی میں شہادت حسین کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے معروف مذہبی سکالر علامہ پیر سید اظہار بخاری نے کہا امت مسلمہ کی رہنمائی کے لیے یوم عشور بہترین منشور ھے ۔ میدان کربلا میں حسین امن واتحاد کا مینار نور نظر آئے ۔دریا فرات سے پانی پینے والے مر گئے ۔

پیاسے آج تک زندہ ہیں۔ حسین نے جبر نہیں۔ صبر سے اسلامی عظمت کا علم بلند کیا امام حسین نے جان دے کر اسلام زندہ کیا ہم اسلام بھی اپنی جان پر نافظ نہیں کرتے ۔یزید بزدل تھا ۔36ملکوں سے مدد مانگ رہا تھا ۔حسین بہادر تھا ۔72افراد کی واپسی کے لیے چراغ بجھاتا رہا ۔لیکن وہاں کھڑا ہر شخص جذبہ حسینت سے ارشاد نظر آتا تھا ۔ ربوبیت ونبوت کے دعویدار بہت آئے ۔حسین جیسا بننے کا دعوہ آج تک کسی نے نہیں کیا۔

اظہار بخاری نے کہا ظالم و جابر کے سامنے ڈٹ جانے کا نام ہی حسینیت ہے ۔حسین 72 افراد کا جوس لے کر ڈٹ گئے۔المیہ ھے 65 اسلامی ملکوں کے سربراہ آج تک بیت المقدس آزاد نہ کرا سکے۔ حسین نے مکہ سے میدان کربلا کا رخ کیا۔ حکومت بھی فتنہ پرستوں کا منہ توڑنے کے لئے جذبہ حسینیت اپنائے ۔جب تک ہمارے دلوں میں نواسہ رسول کی محبت رھے گی ۔یزیدیت لزذتی رہیگی ۔

آج ہمارے دامن میں جو تھوڑا بہت ایمان ہے وہ حسین کا مرہون منت ہے۔ حسینیت اور یزیدیت کا تصادم قیامت تک رہے گا لیکن فتح ہمیشہ حسینیت کے مقدر میں آئے گی لہذا ضرورت اس امر کی ہے سوچوں کو تبدیل کیا جائے گا۔علماء امت مسلمہ کو مضبوط کرنے کے لئے درد دل سے امن و اتحاد کا درس دیں ۔جذبہ حسینت ہی استحکام پاکستان کی ضمانت ہے۔