Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

الطاف احمد بٹ کا کشمیری انسانی حقوق کے محافظوں اور سیاسی قیدیوں کی فوری رہائی کا مطالبہ

25
Spread the love

اسلام آباد : جموں و کشمیر سالویشن موومنٹ کے چیئرمین الطاف احمد بٹ نے کشمیری ہیومن رائٹس ایکٹوسٹ خرم پرویز کی رہائی کا مطالبہ کرنے والے عالمی اداروں کو سراہتے ہوئے کہا کہ مودی کی قیادت والی بی جے پی حکومت کشمیریوں کو خاموش کرانے کے لیے تمام ناجائز طریقے استعمال کر رہی ہے۔

کشمیری انسانی حقوق کے محافظوں اور میڈیا پرسنز کو گرفتار اور تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ جہاں پوری دنیا میں آزادی اظہار رائے کی وکالت کی جاتی ہے، وہیں بھارت کے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں صحافیوں اور انسانی حقوق کے کارکنوں کو جعلی الزامات، لاقانونیت کے سخت قوانین اور من مانی حراستوں کے ذریعے ستایا جاتا ہے۔ چیئرمین بٹ نے مزید کہا کہ کشمیریوں نے گزشتہ 75 سالوں میں سب سے زیادہ نقصان اٹھایا ہے، لیکن 2019 میں آرٹیکل 370 اور 35A کو منسوخ کرنے کے بعد مودی کی قیادت میں بھارت کی بی جے پی حکومت نے کشمیریوں پر دہشت گردی کا راج شروع کیا، انہیں ان کے حق خودارادیت کے جائز مطالبے کی سزا دی گئی۔

الطاف احمد بٹ نے کہا کہ جہاں انسانی حقوق کی تنظیموں اور عالمی تنظیموں نے بھارت سے خرم پرویز کو رہا کرنے کا کہا ہے وہیں درجنوں حریت رہنما مسرت عالم بٹ، یاسین ملک، شبیر احمد شاہ، ظفر اکبر بٹ آسیہ اندرابی، فہمیدہ صوفی اور دیگر مختلف جیلوں میں بند ہیں۔ چیئرمین جموں کشمیر سالویشن موومنٹ الطاف احمد بٹ نے بین الاقوامی تنظیموں اقوام متحدہ، او آئی سی، یورپی یونین اور انسانی حقوق کے اداروں سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی غیر انسانی اور سنگین خلاف ورزیوں کو روکنے، کشمیر سے اپنی قابض افواج کو واپس بلانے استصواب رائے کا عمل شروع کرنے پر مجبور کریں۔