Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

وزیر اعظم آزادکشمیر تنویر الیاس چغتائی کو اکتیس سال بعد کشمیر میں بلدیاتی الیکشن کروانے کا اعزاز مل گیا

31
Spread the love

راولاکوٹ(آ صف اشرف) وزیر اعظم آزادکشمیر تنویر الیاس چغتائی کو اکتیس سال بعد پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں بلدیاتی الیکشن کروانے کا اعزاز مل گیا گزشتہ روز ستائیس نومبر کو اکتیس سال بعد بلدیاتی الیکشن ہو گئے پہلے مرحلہ پر مظفراباد کے تین اضلاع نیلم جہلم ویلی اور درالحکومت مظفراباد میں الیکشن ہوئے 697732ووٹر جن میں376196مرداور321536خواتین ووٹرزنے ووٹ کا حق استمعال کیا 1322کل پولنگ سٹیشن تھے257حساس ترین اور 418حساس قرار پائے تھے ان الیکشن کا سہرا تحریک انصاف کی کشمیر حکومت کے سربراہ تنویر الیاس چغتائی کو گیا

جہنوں نے تمام سازش اور مخالفت کے ان الیکشن کا انعقاد کروایا اس وقت تک پچاس سے زاہد بلامقابلہ تحریک انصاف کے امیدوار جیت چکے ہیں غیر جانبدارانہ رائے کے مطابق تحریک انصاف ہی آزادکشمیر کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آ ئے گی تاہم باغ اور پونچھ اضلاع میں ضلع کونسلز کی سربراہی سمیت بعض علاقائی میونسپل اور ٹاون کمیٹیوں کی سربراہی اپوزیشن لے جائے گی زرائع کے مطابق کل کے الیکشن میںمظفر آ باد کارپوریشن اور ضلع کونسل میں تحریک انصاف بازی لے گئی البتہ نیلم ضلع میں اپوزیشن بھی بہترین نتائج دے گئی جہلم ویلی میں بھی مقامی حکومتیں تحریک انصاف بنانے کامیاب ہو جائے گی

اپوزیشن کے دو بڑوں راجہ فاروق حیدر اور چودھری لطیف اکبر کو آ بائی علاقوں میں خلاف توقع ناکامی کا سامنا رہا خدشہ تھا کہ ان دو سیاست کاروں کے علاقوں سے الیکشن بکس ہی نہ اٹھا کر راہ فرار اختیار کر دی جائے جس وجہ ان حلقوں کو حساس ترین قرار دیا گیا ہے کل کے پہلے مرحلہ کے بعد تین نومبر کو پونچھ ڈویثرن کے الیکشن ہوں گئے جہاں تحریک انصاف اور اپوزیشن کے مابین سخت معرکہ ارائی ہوگی سدھنوتی ضلع میں تحریک انصاف ضلع کونسل اور بلدیہ پلندری کے ساتھ بلوچ اور تراڈکھل کی مقامی حکومتیں بنانے کامیاب ہو جائے گی ضلع کونسل پونچھ اور میونسپل کارپوریشن راولاکوٹ میں پاکستان پیپلز پارٹی اور ن لیگ کا اتحاد کامیاب رہے گا

عباس پور میں تحریک انصاف مقامی حکومت بنا لے گی فاروڈ کہوٹہ کے ضلع اور مقامی میونسپل کمیٹی میں اپوزیشن اور تحریک انصاف کے درمیان خوف ناک معرکہ آ رائی ہوگی اگر فیصل راٹھور اور چودھری عزیز نے ایکا کیا تب تحریک انصاف بائر ہو گی باغ سٹی میں بلدیہ اپوزیشن اتحاد کے پاس رہے گی جبکہ ضلع کونسل میں سخت مقابلہ رہے گا کوٹلی سٹی پیپلز پارٹی ن لیگ اتحاد کی طرف جبکہ مجموعی ضلع تحریک انصاف کے نام رہے گا میرپور اور بھمبر کے اضلاع میں تحریک انصاف کی بالادستی رہے گی خلاف توقع تحریک انصاف مقامی منظر نامے پر چھا جائے گی ریاستی تشخص کی نام لیوا مسلم کانفرنس جماعت اسلامی جموں کشمیر پیپلزپارٹی کی سیاست کو ناقابل تلافی دھچکا لگے گا وسطی باغ اور پاچھیوٹ کے آ بائی حلقوں میں وزیر اعظم آزادکشمیر تنویر الیاس چغتائی کو شکست کا سامنا رہے گا