Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

سی ڈی اے کے تعاون سے آبپارہ کو ماڈل مارکیٹ بنائیں گے:اجمل بلوچ

60
Spread the love

اسلام آباد: ٹریڈرز ویلفیئر ایسوسی ایشن آبپارہ مارکیٹ کی جنرل باڈی کا اجلاس زیر صدارت چیرمین ٹریڈرز ویلفیئر ایسوسی ایشن علی اصغر بٹ منعقد ہوا ۔

اجلاس میں آبپارہ مارکیٹ کے دکانداروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اجلاس کی کارروائی کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے شروع ہوا جنرل سیکرٹری ٹریڈرز ویلفیئر ایسوسی ایشن آبپارہ مارکیٹ اختر حسین عباسی نے سالانہ کاکردگی کی رپورٹ پیش کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے آل پاکستان انجمن تاجران اور آبپارہ مارکیٹ کے صدر اجمل بلوچ نے کہا کہ تاجر کی عزت ہماری اولین ترجیح ہے۔آبپارہ مارکیٹ کو آج یہ اعزاز حاصل ہے کہ آبپارہ مارکیٹ پورے پاکستان کی نمائندگی کرتی ہے۔

اجمل بلوچ کا کہنا تھا کہ پچھلے چھ سالوں سے آبپارہ مارکیٹ میں کوئی کام نہ ہو سکا ہم نے آتے ہی ایک سال کے اندر قلیل عرصے میں مارکیٹ کے تمام ترقیاتی کام کروا دیئے ہیں آبپارہ مارکیٹ اسلام آباد کا گیٹ وے ہے اس کو ماڈل مارکیٹ کا درجہ دلانے کی بھر پور کوشش کر رہے ہیں ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمارا اگلا ٹارگٹ آبپارہ چوک کو کشادہ اور آبپارہ مارکیٹ میں فلاور مارکیٹ بنوانا ہے اجمل بلوچ نے یہ بھی کہا کہ آبپارہ مارکیٹ کو صاف ستھرا رکھنے کے لیے مارکیٹ سے باہر گوشت مرغی ، مچھلی اور سبزی فروٹ کے لئے ماڈل مارکیٹ بنائی جائے گی۔اجلاس میں جمعیت القریش پاکستان کے صدرخورشید احمد قریشی نے بھی خصوصی شرکت کی۔اس اجلاس میں بزرگ تاجر راہنماؤں سردار محمد انور ، اظہار لودھی بھی آخر وقت تک سٹیج پر موجود رہے۔ ایک قرار داد کے ذریعے سی ڈی اے سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ آبپارہ مارکیٹ سے فل فور انکروچمنٹ کا خاتمہ کرائیں۔

ایک دوسری قرار داد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ سیونتھ ایونیو پر تعمیر کیا گیا انٹر چینج کی ڈیزائینگ کی غلطی کی انکواری کرائی جائے اور قومی دولت ضائع کرنے والوں کو نیپ کے حوالے کیا جائے۔ ایک تیسری قرار داد میں چیرمین سی ڈی اے سے مطالبہ کیا گیا کہ آبپارہ مارکیٹ میں ملٹی سٹوری پارکنگ کی تعمیر شروع کرائی جائے۔آ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر اجمل بلوچ نے یہ بھی کہا کہ آبپارہ مارکیٹ کے تاجروں نے آٹھ الیکشن میں لگاتار 16سال ہمارا انتخاب کیا لیکن نااہل لوگوں کی وجہ سے گزشتہ 4 سال تک آبپارہ مارکیٹ کے تاجروں کو حق نمائندگی سے محروم رکھا گیا۔ جس کی وجہ سے مارکیٹ میں دوبارہ مسائل نے جنم لیا مارکیٹ کے مسائل حل کراتے رہیں گے ۔ انہوں نے تاجروں سے اپیل کی کہ وہ اپنی صفوں میں اتحاد قائم رکھیں اور تاجر دشمن عناصر سے ہوشیار رہیں۔اجلاس کے اختتام پر مارکیٹ میں وفات پا جانے والے تاجروں کے لئے مغفرت کی دعا مانگی گئی۔