Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

سلیمان شہباز کی واپسی این آر او ٹو کا حصہ ہے، نیب پہلے بھی اسٹیبلشمنٹ کے ماتحت تھی

29
Spread the love

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان کا کہنا ہے کہ سلیمان شہباز کی واپسی این آر او ٹو کا حصہ ہے، نیب پہلے بھی اسٹیبلشمنٹ کے ماتحت تھی صرف کمزوروں پر ہاتھ ڈالتی رہی۔

لاہور میں یو ٹیوبرز سے ملاقات میں عمران خان نے کہا کہ وہ وزیراعظم تھےکبھی جنرل باجوہ کو باس نہیں کہا، نئے آرمی چیف کو  پرانے آرمی چیف کی پالیسیوں کو لےکر نہیں چلنا چاہیے، جنرل فیض کو  آرمی چیف بنانےکا کبھی نہیں سوچا تھا ان کے خلاف پراپیگنڈہ کیا گیا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ان پر حملےکا منصوبہ ڈھائی ماہ پہلے بنایا گیا تھا،  پلاننگ کے ذریعے آڈیوز ریلیز کی گئی ہیں، وہ جب اقتدار میں آئے تو ہر قسم کا مافیا تھا مگر وہ ان کے خلاف ایکشن نہیں لے سکے، معاشرہ اس وقت تک تگڑا نہیں ہوتا جب تک انصاف نہ ہو۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ پرویز الہٰی نے مجھ پر مکمل اعتمادکیا ہے جیسا میں چاہوں گا ویسا کریں گے۔اس سے قبل  عمران خان سے اٹک، جہلم، چکوال اور سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی نے ملاقات کی جس میں ملکی سیاسی صورت حال، سیاسی حکمت عملی اور  آئندہ کے لائحہ عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

 عمران خان نے پی ٹی آئی ارکان اسمبلی کو انتخابات کی تیاری کرنےکی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ارکان اسمبلی اپنے حلقوں میں عوام کو وفاقی حکومت کی ناکامیوں سے آگاہ کریں۔ان کا کہنا تھا کہ ملکی مسائل کا واحد حل انتخابات ہیں، پرویز الہٰی نے یقین دہانی کرائی ہےکہ جب وہ کہیں گے اسمبلیاں تحلیل ہوجائیں گی۔