Pakistan latest updates, breaking news, news in urdu

سندھ میں سٹیٹ آف دی آرٹ سینٹر آف ایکسیلنس کا افتتاح

43
Spread the love

سندھ میں نوجوانوں کی قابلیت میں اضافے اور فنی اور پیشہ ورانہ تربیت کو بہتربنانے کی غرض سے یورپی یونین، جرمنی، اور ناروے کی جانب سے جدیدترین سینٹر آف ایکسی لینس (CoE) برائے ٹیکنیکل اینڈ ووکیشنل ایجوکیشن اینڈ ٹریننگ، (TVET) حکومتِ سندھ کے حوالے کیا۔ اس مرکز میں صوبے کے نوجوانوں اور تدریسی عملے کے لیے جدید ترین ٹیکنالوجیز اور تربیت کے مواقع فراہم کیے گئے ہیں۔

آنے والے سالوں میں، اس سہولت سے تربیتی ماحول کا ایک رجحان پیدا ہو گا جو کہ ملازمت کے شعبےمیں داخل ہونے کے لیے ایک قابل اور مسابقتی افرادی قوت تیار کرنے میں مدد گار ثابت ہو گا ۔
یہ مرکز نہ صرف اساتذہ کی تربیت بلکہ نوجوانوں کو ہنر کی تربیت فراہم کرنے کے لیے بھی خطے میں اہم کردار ادا کرے گا۔مرکز کے قیام سے جدید لیب کی سہولیات، کیریئر کاؤنسلنگ اور جاب پلیسمنٹ کی خدمات اب ایک ہی چھت کے نیچے مل سکیں گی ۔ نئی سہولت ایک موجودہ TVET سنٹر کی اپ گریڈیشن کا نتیجہ ہے جسے TVET سیکٹر سپورٹ پروگرام اور یورپی یونین (EU)، جرمن وفاقی وزارت برائے اقتصادی تعاون اور ترقی (BMZ) اور ناروے کی حکومت کی طرف سے مالی اعانت فراہم کی گئی ہے۔

تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے، چیئرمین TVETA سندھ ، سلیم رضا جلبانی نے صوبے میں ہنر مندی کے شعبے کو سپورٹ کرنے پر ترقیاتی شراکت داروں خصوصاً یورپی یونین کی کوششوں کو سراہاتے ہوئے کہا "ہماری ذمہ داری یہ ہے کہ ،صوبے کے نوجوانوں کو جدید ترین سہولیات کے ساتھ ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز میں بھی مناسب تربیت فراہم کی جائے، جو کہ اساتذہ اور تربیت حاصل کرنے والوں، دونوں کے لیے دستیاب ہیں”۔

پاکستان میں یورپی یونین کے وفد کے تعاون کے سربراہ جناب اوویڈیو مائیک نے کہا کہ، ” یورپی یونین TVET کو پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے ایک ترجیحی شعبے کے طور پر دیکھتا ہے اور ایک دہائی سے زائد عرصے سے TVET پالیسی اور اصلاحاتی عمل کی حمایت کر رہا ہے۔”
انہوں نے مزید کہا، "کوٹری میں سینٹر آف ایکسی لینس کا قیام ، ہماری حمایت اوراہم کامیابیوں میں سے ایک ہے۔ ہم توقع کرتے ہیں کہ یہ بین الاقوامی معیار کے مطابق خدمات فراہم کرتے ہوئے، سندھ کے دیگر تمام اداروں کے لیے مثال بنے گا”۔

جرمن سفارت خانے میں ترقیاتی تعاون کے سربراہ، ڈاکٹر سیبسٹین پاسٹ نے کہا ، "سنٹر آف ایکسی لینس کی حمایت کے تحت سندھ میں نہ صرف ملازمتوں پر بلکہ انٹرپرینیورشپ ماڈلز پر انحصار کرنے کی بڑی صلاحیت کو اجاگر کیا گیا ۔ جرمنی 2026 تک پاکستان کے ہنر کے شعبے میں اپنا کام جاری رکھنے کے لیے پرعزم ہے”۔

سندھ TVETA کے منیجنگ ڈائریکٹر اور اپ گریڈ ڈتربیتی سہولت کے پرنسپل ڈاکٹرغلام مصطفی سہاگ نے ادارے کے تاریخی تناظر پر روشنی ڈالی اور کہا، "میں تمام شراکت داروں کا مشکور ہوں- TVET سیکٹر
سپورٹ پروگرام کی کوششوں سے یہ تبدیلی کا ایک کامیاب سفر رہا ہے”